اہم اتحادی پی ٹی آئی سے جدا۔۔۔۔عمران حکومت کو شدید جھٹکا

0
159

اسلام آباد (ویب ڈیسک) کچھ عرصہ قبل سردار اخترجان مینگل نے کہا تھا کہ وزیر اعظم نے لاپتہ افراد کے مسئلے پر چیف آف آرمی سٹاف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے جلد ملاقات کی یقین دہانی کرائی ہم مطالبات کے حل کے لئے کسی سے بھی ملنے کو تیار ہیں۔اگر وفاقی حکومت نے 4 ماہ تک ہماری مطالبات منظور نہیں کئے تو پھر بلوچستان نیشنل پارٹی آئندہ لا ئحہ طے کرے گی۔

 ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک نجی ٹی وی چینل سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔سردار اخترجان مینگل نے کہا کہ وزیر اعظم نے لاپتہ افراد کے مسئلے کے حل کے لئے چیف آف آرمی سٹاف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے جلد ملاقات کروانے کی یقین دہانی کرادی ہے اوربلوچستان نیشنل پارٹی نے مطالبات کی منظوری کے لئے حکومت کو چار ماہ کی ڈیڈ لائن دے دی ۔صدر، وزیر اعظم، کابینہ ،آرمی چیف ،ڈی جی آئی ایس آئی کوئی بھی ہمارا مسئلہ حل کرے ۔

سردار اختر مینگل نے کہا کہ ہم مطالبات کی منظوری کے لئے کسی سے بھی ملنے کو تیار ہیں، وزیر اعظم کو بتایا پانچ ہزار میں سے300لاپتہ بازیاب تو400مزید لاپتہ ہوگئے۔

تفصیلا ت کے مطا بق بی این پی (مینگل) کے صدر اختر مینگل نے اب واضح  اعلان کیا ہے کہ ان کی جماعت کا حکومت کے ساتھ اتحاد اگست میں ختم ہو جائیگا اور پارٹی اپنی راہیں جدا کرنے میں آزاد ہوگی کیونکہ طے شدہ معاہدے کے مطابق اتحاد کی مدت ختم ہو رہی ہے۔

 روزنامہ جنگ کے مطابق انہوں نے حکمران جماعت پی ٹی آئی کے رویے پر مایوسی کا اظہار کیا اور کہا کہ گزشتہ سال کیے گئے وعدے کے مطابق حکومت بی این پی (مینگل) اور بلو چستا ن کے عوام کے تحفظات اور ان کے مسائل کے حل کیلئے 8؍ رکنی کمیٹی تشکیل دینے میں ناکام ہو چکی ہے۔ کمیٹی کے قیام پر اتفاق وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ ماہ اسلام آباد میں ہونے والی ملاقات میں ہوا تھا۔ بی این پی (مینگل) نے کمیٹی کیلئے چار ارکان کو نامزد کیا لیکن حکومت نے اب تک اس حوالے سے کوئی قدم نہیں اٹھایا اور ارکان نامزد نہیں کیے۔ اختر مینگل نے حکومتی رویے پر افسوس کا اظہار کیا ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here